Jump to content
URDU FUN CLUB

Octopus

Active Members
  • Content Count

    45
  • Joined

  • Last visited

Community Reputation

53

1 Follower

Profile Information

  • Gender
    Male

Recent Profile Visitors

The recent visitors block is disabled and is not being shown to other users.

  1. اس کہانی کے پہلے پیج پر لکھا ہے کہ شیخو جی ذاتی وجوہات کی بنا پر کہانی مکمل نہ کر سکے لہٰذا ڈاکٹر فیصل خان آگے چلائیں گے آج بھی وہی صورت حال ہے کیا فرق پڑے گا اگر دوسرا ڈرائیور بس کو چلائے مسافر تو سفر جاری رکھ پائے گا ڈاکٹر خان کی مصروفیات جتنی آج ہیں اگلے سال اس سے زیادہ ہی ہونی ہیں ایک اپڈیٹ اگر پڑھنے کو ملے تو پھر معاملہ کسی حتمی حل کی طرف جا سکتا ہے
  2. ایک مختصر اپڈیٹ بطور نمونہ پیش کر دیں۔ انتظامیہ کا شش و پنج بھی دور ہو جائے گا۔ قارئین بھی حتمی رائے دے دیں گے۔ زیادہ لائک ملے تو زندہ باد ورنہ آپ کچھ اور لکھ لینا۔
  3. یہ شاندار خیال ہے ۔ صرف چوہدری صاحب ہی نہیں سب کو اسٹوری کی اگلی اقساط لکھنے کی دعوت دی جائے۔ جو ڈاکٹر کے من کو بھائے وہ باقاعدہ طور پر شیئر کر دی جائے
  4. انسیسٹ کہانیاں انسانیت کی توہین ہیں۔ رشتوں کے تقدس کی پامالی ہیں۔ کم عمر کچے ذہنوں کی گمراہی کا سبب ہیں۔ یہ واحد نظریاتی فورم ہے جو ذہنی تفریح کے لیے بنا ہے۔ نہ کہ نفسیاتی مریض بنانے کے لیے۔ صرف بیمار ذہنیت کے لوگ انسیسٹ کہانیاں تخلیق کرتے ہیں اور نیچ ذوق رکھنے والے انسیسٹ کو سراہتے ہیں۔ سب کی اصلاح کے لیے نشاندہی کی غرض سے گذارش ہے کہ جو معیار قائم ہے اس پر انتظامیہ تعریف کی مستحق ہے۔ اگر پیسہ مقصد ہوتا تو فورم پر اشتہارات بھی ہوتے اور انسیسٹ بھی۔ انسیسٹ مردہ باد
  5. ازراہ کرم وضاحت کر دیجئے کہ یہ ارادہ قربانی والی عید کے حوالے سے تھا یا آنے والی عیدالفطر پر نوازا جائے گا۔۔۔؟
  6. محترم ہستیوں کے نام کا استعمال غلط ہے۔ رائٹر سے جب یہ خطا ہوئی تب یہ شرط بطور ممنوع اعلان نہیں ہوئی تھی۔ لکھنے والے نے اگر غلطی مان لی ہے اور متنازع پیجز ہٹا دیے ہیں تو احترام قائم ہو گیا ہے۔ اس سے زیادہ کس طور حق ادا ہو سکتا ہے؟ یہ فورم اس سوال پر بحث کا بھی مستحق نہیں۔ مزید اس موضوع کو زیر بحث لانے سے بعض رہتے ہوئے کہانی کے مستقبل کا فیصلہ کرنا رائٹر کا حق ہے جس نے اس شغل پر بنا کسی صلے کے بےحساب وقت اور توانائی صرف کی۔ فورم کو اگر درجنوں کے حساب سے رائٹر میسر ہوتے تو ناقدری پر تعجب نہ ہوتا۔ غلطی کی تلافی ہو جائے تو بات ختم کر دینی چاہیے۔ اپنا تو یہی اصول ہے۔ میں ظفر کی لگن کا قدر دان ہوں۔ میری رائے ہے کہ ایڈمن اس زاویے سے بھی سوچیں کہ غلطی ہوئی ہے بدنیتی سے یہ کام نہیں ہوا۔ میری تجویز ہے کہ اس موضوع پر مزید کوئی کمنٹ نہ لکھا جائے۔ میری خواہش ہے کہ ظفر اس ایشو کو بھلا کر مزید اپڈیٹ لکھتا رہے۔
  7. اپڈیٹ یوں ہی باقاعدگی سے آتا رہا تو خوشی ہو گی۔ دلچسپ تو ہے حقیقت سے نزدیک تر چلے تو مزید اچھا ہو گا۔
  8. Aisi situation pe le ja k aap ne qalam hath se rakha hay k banda soch soch pagal ho jaye....
  9. آپ کا چپ کر کے اسٹوری پڑھنا اور اپنی رائے محفوظ رکھنا ہی مناسب ہے۔ آگے بھی فضولیات سے باز رہنا۔ حد ہی کر دی خوشامد کی۔ نہ کسی کو دل آزاری کا شکوہ۔ نہ ماحول میں کوئی کشیدگی۔ رائٹر تو خود دعوت دیتے رہے ہیں۔ ٹھیک اندازہ لگانے والے کو انعام دینے کا بھی کہا ہے۔ کمنٹس لکھنے کے لیے قارئین کو متحرک کیا ہے۔ تم لکھتے ہو "شاید ان جاہل لوگوں کو کچھ سمجھ آ جائے" دوسروں کی رائے کو عجیب قسم کی بکواس قرار دیتے ہو۔ میں با قاعدہ طور پر احتجاج ریکارڈ کروا رہا ہوں میری تجویز ہے کہ موڈریٹر کو اسٹوری پر کمنٹس کے علاوہ ایسے کمنٹس نہیں لینے چاہئیں جن میں اسٹوری کے علاوہ غیر متعلق باتیں لکھی ہوں اور دوسروں کو برا بھلا کہا گیا ہو۔
  10. اس فرمائش کی وجہ بھی تو بتائیں
  11. اتنا عمدہ تبصرہ لکھتے ہیں آپ کوئی کہانی بھی لکھیں جناب
  12. ضوفی کو پہلی بار جب پارلر میں ٹریپ کیا تو اس کے پیریڈز جاری تھے۔جس کے سبب وہ کچھ کر نہ سکے تصاویر لینے کے سوا۔۔ اور اگلے اپڈیٹ کے پہلے منظر میں یاسر باہر جا کر سالار کے نکلنے سے پہلے اس کی گاڑی کو آگ لگا دے گا اور ان کے شک کو فیضان گینگ کی طرف منتقل کر دے گا۔ دونوں گینگ خود ایک دوسرے کو ختم کر دیں گے۔ یاسر کے حصے میں تصاویر حاصل کرنے کے سوا کوئی مشقت نہیں آنے والی ہے۔۔۔ مشہور انگریزی کہاوت ہے Heroes Never Dies. یہاں تو ہیرو کو خراش بھی نہیں آنے والی۔
×
×
  • Create New...
DMCA.com Protection Status